ہفت روزہ دعوت – خصوصی شمارہ

اہم ترین

اداریہ

فہیم الدین احمد خاندان انسانی تہذیب و تمدن کی سب سے بنیادی اکائی ہے۔ اسی کے ذریعے انسان کی جبلت میں…

خاندان کا اسلامی نظام

سید سعادت اللہ حسینی تمہاری تہذیب اپنے خنجر سے آپ ہی خودکشی کرے گی جو شاخ نازک پہ آشیانہ بنے گا ناپائیدار ہوگا اقبال کی یہ پیشین گوئی جدید مغربی تہذیب کے جن شعبوں میں پوری ہوتی ہوئی صاف نظر آرہی ہے ،اُن میں خاندان کا شعبہ شاید سر فہرست ہے۔ لبرل مکتب فکر مغربی دنیا کا مقبول ترین مکتب فکر تھا۔ اس نے خاندان کے بارے میں یہ تصور…
مزید پڑھیں...

مغربی نظامِ خاندان کی نظریاتی بنیادوں کا جائزہ

مذہب سے بغاوت اور ’پوپوکریسی‘‘ کے خلاف نفرت آمیز ردِ عمل کے نتیجہ میں مغربی معاشرہ نہ صرف مذہب سے دور ہوا بلکہ پرانی معاشرتی اور مذہبی اقدارو روایات کو سرے سے ملیا میٹ کرنے کی تحریک چلابیٹھا اور لادینیت ہی اس کا دین ٹھہری۔
مزید پڑھیں...

’’میری زندگی – میری مرضی‘‘

ڈاکٹر شہناز بیگم (دربھنگہ) دنیا جس تیزی سے ترقی کے منازل طے کرتی رہی، اسی تیزی سے نئے نئے طریقے بھی عورت کے استحصال کی غرض سے سامنے آتے گئے، گویا عورت کے ساتھ نا انصافی اور حق تلفی میں کبھی کوئی کسر چھوڑی ہی نہیں گئی۔ موجودہ دور میں بھی ،جب کہ عورت پوری قوت کے ساتھ خود کو مرد کے آہنی پنجوں سے آزاد کرانے کے لیے جدوجہد میں مصروف ہے،…
مزید پڑھیں...

گھریلو تشدد

فرحت الفیہ(جالنہ) گھر اور خاندان کو مضبوط، مستحکم اور پیار و محبت کی بنیادوں پر استوار کرنے میں گھریلو تشدد بہت بڑی رکاوٹ بھی ہے اور موجودہ دور کا بہت بڑا اشو بھی۔ یہ تشدد والدین کا اولاد کے ساتھ بھی ہوسکتا ہے اور اولاد کا والدین کے ساتھ بھی۔ یہ بھائی بھائی اور بھائی بہنوں کے ساتھ بھی ہوسکتا ہے اور باہم دیگر دوسرے خونی رشتہ داروں کے…
مزید پڑھیں...

رحمِ مادر میں لڑکیوں کا قتل

خان عرشیہ شکیل ، ممبئی کیاکوئی انسان جس کے جسم میںدھڑکتا ہوا دل ہو،وہ اس بات کا تصور کرسکتا ہے کہ اپنی نومولود بیٹی کو مارڈالے؟ مگر افسوس کہ ہندوستانی سماج میں ایسا ہوتاہے۔ یہی وجہ ہے کہ یہاں ایسے گاؤں بھی ہیں جن میں سرےسے لڑکیاں موجود ہی نہیں ہیں۔ ہریانہ کا مہندر گڑھ ضلع اس کی مثال ہے جس میں تقریباً پانچ درجن سے زیادہ گاؤں ایسے پائے…
مزید پڑھیں...

خاندانی نظام کی کمزوری

اولاً تو امت مسلمہ تعلیمی میدان میں ہی پیچھے ہے اور اس پر مزید ستم یہ کہ اس نے ایک ایسے تعلیمی نظام کی پیروی کی ہے جس میں مرکزیت نہ تو انسان کو حاصل ہے اور نہ اللہ کو بلکہ اس کا مرکزی نقطہ دنیا کے لیے سرمایہ داروں کے لیے ورک فورس تیار کرنا ہے۔
مزید پڑھیں...

ہفت روزہ دعوت ایک غیر منافع بخش ادارہ ہے۔ اعلیٰ اقدار کی حامل صحافت کے فروغ کے لیے اس کا تعاون کیجیے۔